حافظ نعیم کے فیصلے پر الیکشن کمیشن اب اپنا دفاع کیسے کرے گا؟ علی محمد خان

اسلام آباد (ایچ آراین ڈبلیو) پی ٹی آئی رہنما علی محمد خان نے کہا ہے کہ خیرات میں دی گئی سیٹ واپس کر کے حافظ نعیم نے اخلاق کا اعلیٰ ترین معیار قائم کر دیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق این اے 23 مردان سے قومی نشست جیتنے والے پی ٹی آئی رہنما علی محمد خان نے جماعت اسلامی کراچی کے امیر حافظ نعیم الرحمان کے پی ایس 129 کی جیتی ہوئی نشست چھوڑنے کے اعلان پر ان کی تعریف کی ہے۔ علی محمد خان نے ایکس پر اپنی ٹویٹ میں لکھا ’’خیرات میں دی گئی سیٹ واپس کر کے حافظ صاحب نے اخلاق کا اعلیٰ ترین معیار قائم کیا ہے، الیکشن کمیشن آف پاکستان اب اپنا دفاع کیسے کرے گا اس فیصلے پر؟‘‘ انھوں نے لکھا ’’جو جیتا ہے اسی نے دھاندلی کا بھانڈا بیچ چوراہے پھوڑ دیا ہے، اسی لیے کہا تھا کہ عوام کو ان کا مینڈیٹ واپس کیا جائے۔‘‘ واضح رہے کہ حافظ نعیم نے صوبائی نشست کے نتائج کے حوالے سے کہا تھا کہ ان سے زیادہ ووٹ پی ٹی آئی کے آزاد امیدوار نے لیے تھے، حافظ نعیم نے ایکس پر اپنی پوسٹ میں لکھا ’’میں نے کہا تھا جو جیتے اسے جیتنے دو جو ہارے اسے ہارنے دو، میری جیتی ہوئی سیٹ پر فارم 45 کے مطابق پی ٹی آئی جیتی ہے، ضمیر اور جماعت کی اخلاقی روایات کے مطابق صوبائی سیٹ چھوڑنے کا اعلان کرتا ہوں اور مطالبہ کرتا ہوں کہ ہمیں ہماری ساری جیتی ہوئی سیٹیں واپس کی جائیں۔‘‘